بھارتی موبائل ایپلی کیشن 700 ملین ڈالر میں فروخت

بھارت کی معروف سوشل نیٹ ورکنگ ایپلی کیشن شیئر چیٹ نے اپنی حریف ویڈیو شیئرنگ ایپ ٹکا ٹک کو 700 ملین ڈالر میں خرید لیا ہے۔غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطانق دونوں کمپنیوں کے درمیان مسابقت بڑھنے کی وجہ سے غیر ملکی سرمایہ کاروں نے اس میں پیسا لگایا۔ایم ایکس ٹکا ٹک کے نام سے منظر عام پر آنے والی ویڈیو شیئرنگ ایپ کو بھارت میں ٹک ٹاک پر عائد ہونے والی پابندی کے بعد ملی۔ٹکاٹک نے اپنی ریلیز کے ایک ماہ کے اندر اندر ہی ایک ارب ویوز کا سفر طے کرلیا تھا۔ اور 2021 کے وسط تک اس ایپ کے متحرک صارفین کی تعداد 45 ملین ماہانہ سے تجاوز کرچکی تھی ، جس میں مزید اضافہ ہوگیا ہے۔رپورٹ کے مطابق شیئر چیٹ کی مارکیٹ ویلیو اس وقت تقریبا 4 ارب ڈالر پر پہنچ چکی ہے جب کہ سنگاپور کی تیماسیک ہولڈنگز اور ٹوئٹر اس کے بڑے سرمایہ کاروں میں سے ایک ہیں۔کمپنی کا کہنا ہے کہ وہ اپنی دونوں ویڈیو شیئرنگ ایپ میں مصنوعی ذہانت کے ٹولز استعمال کرنے پر غور کر رہی ہے۔شیئر چیٹ کی پیرنٹ کمپنی محلہ ٹیک نے ٹک ٹاک اور بائٹ ڈانس پر انڈیا میں پابندی کے بعد ’موج‘ کے نام سے شارٹ ویڈیو ایپ تخلیق کی تھی۔جس کا بنیادی مقصد ٹک ٹاک پر پابندی سے پیدا ہونے والے خلا کو بھرنا اور ٹکا ٹک کے مضبوط حریف کے طور پر سامنے آنا تھا۔یہ ایپلی کیشن 15 مختلف زبانوں کو سپورٹ کرنے کے ساتھ ساتھ 15 سیکنڈ کی مختصر ویڈیو بنانے اور انہیں پرسنلائز کرنے کی سہولت فراہم کرتی ہے۔ مختصر عرصے میں موج کے ماہانہ ایکٹو یوزر کی تعداد 100 ملین سے تجاوز کرچکی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.