ٹک ٹاک پر غیر اخلاقی مواد کی روک تھام کے لیے تحریری حکم نامہ جاری

ٹک ٹاک پر غیر اخلاقی مواد کی روک تھام کے لیے تحریری حکم نامہ جاری


معروف ویڈیو شیئرنگ ایپلیکیشن ٹک ٹاک پر غیر اخلاقی مواد کی روک تھام کے لیے تحریری حکم نامہ جاری کر دیا گیا ہے۔

حکم نامہ پشاور ہائی کورٹ کی جانب سے ٹک ٹک کے خلاف دائر درخواست پر جاری کیا گیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ٹک ٹاک پر غیر اخلاقی مواد سے زیادہ تر نوجوان نسل متاثر ہو رہی ہے۔

تحریری حکم نامے کے مطابق عدالت نے متعلقہ حکام کو ٹک ٹاک پر غیراخلاقی مواد روکنے کے لیے ہدایات جاری کی تھیں، پاکستان ٹیلی کمیو نیکیشن اتھارٹی کی تپورٹ کے مطابق اب تک 2 کروڑ 89 لاکھ 35 ہزار 34 غیر اخلاقی ویڈیوز ہٹا دی گئی ہیں۔

پشاور ہائی کورٹ نے کہا کہ ٹک ٹاک پر غیر اخلاقی مواد شیئر کرنے والوں کے خلاف کارروائی ہوتی ہے لیکن ان کو سزا نہیں ملتی جس کی وجہ سے وہ دوبارہ خلاف ورزی کرتے ہیں۔

عدالت نے کہا کہ عدالت چاہتی ہے کہ پی ٹی اے اس ایکسرسائز کو جاری رکھے اور جو غیر اخلاقی مواد شیئر کرتا ہے ان کو اسی وقت بلاک کیا جائے، اس کے لیے ایک طریقہ کار بنایا جائے تاکہ بار بار خلاف ورزی کرنے والے اکاؤنٹس کو بلاک کیا جائے

پشاور ہائی کورٹ نے پی ٹی اے سے آئندہ سماعت پر رپورٹ طلب کرلی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.