بہن کے نوجوت سنگھ سدھو پر الزامات، اہلیہ کا ردعمل

بھارت کے اپوزیشن رہنما اور سابق کرکٹر نوجوت سنگھ سدھو پر بہن کے شدید الزامات کے بعد اہلیہ جواب دینے میدان میں آگئیں۔نوجوت سنگھ سدھو کی اہلیہ نے ثمن تور کے دعوؤں پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے خبر ایجنسی کو بتایا کہ انہیں امریکا میں رہنے والی ثمن کے بارے میں کچھ نہیں معلوم، میں نے کبھی اس کے بارے میں نہیں سُنا نہ میں اسے جانتی ہوں۔اہلیہ نے کہا کہ نوجوت سنگھ سدھو کے والد کی پہلی بیوی سے دو بیٹیاں تھیں، میں انہیں نہیں جانتی۔خیال رہے کہ نوجوت سنگھ سدھو کی بہن سمن نے انکشاف کیا تھا کہ سدھو ایک ظالم شخص ہیں جنہوں نے پیسوں کے لیے ماں کو چھوڑ دیا۔سمن تور کے 58 سالہ نوجوت سدھو کے خلاف یہ الزامات ایسے وقت میں سامنے آئے ہیں جب کانگریس لیڈر پنجاب اسمبلی کے انتخابات میں وزیر اعلیٰ کے امیدوار کے طور پر مہم چلا رہے ہیں۔پنجاب کانگریس کے سربراہ نوجوت سنگھ سدھو کی بڑی بہن سمن تور نے ان پر الزام لگایا کہ بھائی نے بڑھاپے میں پیسے کی خاطر اپنی ماں کو چھوڑ دیا۔امریکا سے بھارت پہنچنے والی سمن تور نے چندی گڑھ میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے الزام لگایا کہ نوجوت سدھو نے انہیں 1986 میں والد کے انتقال کے بعد والدہ کے ساتھ گھر سے نکال دیا تھا۔سمن تور نے دعویٰ کیا کہ اُن کی والدہ کا 1989 میں ایک ریلوے اسٹیشن پر انتقال ہوا تھا۔انہوں نے یہ بھی کہا تھا کہ میں یہاں جو بھی بات کروں گی اس کے تمام تر ثبوت میرے پاس موجود ہیں۔سمن تور نے کہا تھا کہ نوجوت سنگھ سدھو سے رابطہ کرنے کی کوششیں ناکام ہونے کے بعد مجھے پریس کانفرنس کرنی پڑی، نوجوت سنگھ سدھو نے مجھے اپنے فون پر بلاک کیا ہوا ہے، گھر ملنے گئی تو دروازہ نہیں کھولا گیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.