سیب کو پھلوں کا بادشاہ کیوں کہا جاتا ہے؟

سیب کو پھلوں کا بادشاہ کیوں کہا جاتا ہے؟ایک طرف، سیب ایک کم گلیسیمک انڈیکس (GI) پھل ہے جو ٹائپ 2 ذیابیطس کے مریضوں میں خون میں شوگر کے اضافے کو روکتا ہے اور دوسری طرف، سیب ذیابیطس کے خطرے کو پہلے ہی کم کرنے میں مدد کر سکتے ہیں۔ متعدد مطالعات کے مطابق سیب اور ناشپاتی کے استعمال سے ذیابیطس کے امکانات 18 فیصد کم ہوتے ہیں۔روزانہ ایک سیب ہمیں ڈاکٹر سے دور رکھتا ہے، بچپن سے لے کر جوانی تک، یہ جملہ ہر گھر میں دہرایا جاتا ہے تاکہ لمبی عمر اور بیماریوں سے پاک زندگی کے لیے صحت بخش غذا کو فروغ دیا جا سکے اور جب صحت مند اور متوازن غذا کی پیروی کی بات آتی ہے، تو سبزیوں اور اناج کے ساتھ پھلوں کو بھی ایک ضروری غذا سمجھا جاتا ہے۔ اور جب بات صحت مند پھلوں کی بات ہو تو گہرے سرخ رنگ کے سیب اپنی غذائیت کی وجہ سے کسی سپر فوڈ سے کم نہیں سمجھے جاتے۔جب ذیابیطس اور ہائی بلڈ پریشر جیسے ممکنہ طور پر نقصان دہ دل کے مسائل کی بات آتی ہے تو سیب حیرت انگیز پھل کے طور پر کام کرتا ہے۔ سبز سیب ذیابیطس کے مریضوں کے لیے سُپر فوڈ سمجھے جاتے ہیں۔ یہ پھل زنک، آئرن اور دیگر ٹریس میٹلز سے بھرپور ہوتا ہے جو بلڈ شوگر کو کنٹرول میں رکھنے میں مدد کرتا ہے۔ سبز سیب میں چینی کی مقدار بھی کم ہوتی ہے۔ سُرخ سیب کا انتخاب نہ کریں کیونکہ ان میں شوگر کی مقدار زیادہ ہوتی ہے۔ہائی بلڈ پریشر ایک ایسا مسئلہ ہے جو دُنیا بھر کے تمام ممالک کے لوگوں کے لیے تشویش کا ایک بڑا سبب بن گیا ہے، سیب اس محرک عنصر کو کنٹرول کرنے میں مدد کر سکتا ہے جو دل کی بیماری کے بڑھتے ہوئے خطرے کے لیے ذمہ دار ہے۔سیب پیکٹین کا ایک بھرپور ذریعہ ہیں، ایک ایسا مادہ جو پری بائیوٹک کے طور پر کام کرتا ہے، جو آنتوں کی صحت کو بہتر بناتا ہے۔ مزید برآں، اس میں غذائی ریشہ ہوتا ہے جو قبض کو روکنے میں مدد کرتا ہے، اچھے بیکٹیریا کو سپورٹ کرتا ہے اور اس طرح ہاضمے کی پریشانی کو دور رکھتا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.