دوارب سال قدیم نایاب ترین سیاہ ہیرا نمائش کے لیے پیش

دنیا کا نایاب ترین سیاہ ہیرا نمائش کے لیے پیش کردیا گیا جس کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ یہ 2 سے 3 ارب سال قدیم ہے، اور اس وقت زمین سے ٹکرانے والے شہاب ثاقب سے بنا ہے۔بین الاقوامی ویب سائٹ کے مطابق دنیا کا سب سے بڑا کالا ہیرا جس کا نام اینگما ہے عوام کے سامنے پیش کردیا گیا۔ اس کا نام گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈز میں بھی درج ہے۔اس نایاب سیاہ ہیرے کو دبئی کے سدوبیز میں 17 جنوری کو پہلی بار عوام کے سامنے لایا گیا جو کہ 20 جنوری تک وہیں موجود رہے گا۔یہ کالا ہیرا 555 قیراط کا ہے، نمائش کے بعد اور لندن اور لاس اینجلس لے جائے جانے سے قبل یہ ہیرا دبئی ڈائمنڈ ایکسچینج میں موجود رہے گا، جہاں 3 سے 9 فروری تک اس کی آن لائن بولی لگے گی۔کاربونیڈو بلیک ڈائمنڈ انتہائی نایاب ہے جو کہ 2 سے 3 ارب سال قبل کے دور کا ہے، ان کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ وہ ایسے اجزا سے بنے ہیں جو شہاب ثاقب میں ہوتے ہیں، جو زمین سے ٹکرایا تھا۔اس میں نائٹروجن اور ہائیڈروجن پایا گیا ہے جبکہ اسبرونائٹ بھی موجود ہے جو شہاب ثاقب میں پایا جاتا ہے۔اسی طرح اس کی بڑی جسامت جو کہ ریکارڈ توڑنے کا باعث بنی، کے بارے میں بتایا گیا ہے کہ اس کی شکل مشرق وسطیٰ کے ہتھیلی نما خمسہ سے ملتی جلتی ہے جو نظر بد سے محفوظ رکھنے والی علامت کے طور پر مشہور ہے۔خمسہ کا تعلق پانچویں ہندسے سے ہے اور یہ ہیرا نہ صرف 555 اعشاریہ 55 کا سائز رکھتا ہے بلکہ اس کے ٹھیک 55 پہلو بھی ہیں۔سدوبیز امارات کے سربراہ کاتیا نونو بوئز اس حوالے سے کہتے ہیں کہ ہم اسے لائق عزت سمجھتے ہیں کہ دبئی کو سب سے پہلے نمائش کے قابل سمجھا گیا، ہم اس سفر میں اپنا کردار ادا کرنے کے لیے پرجوش ہیں۔یہ ہیرا متحدہ عرب امارات میں خریداری کے لیے سب سے پہلے دستیاب ہوگا جو کرپٹو کرنسی کے ذریعے خریدا جا سکے گا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published.