موٹر وے پر مبینہ گینگ ریپ کا ایک اور واقعہ، ایک ملزم گرفتار

پنجاب میں فیصل آباد ملتان موٹروے پر ٹوبہ ٹیک سنگھ کے قریب 2 ملزمان نے 18 سالہ لڑکی کو نوکری کا جھانسہ دے کر مبینہ طور پر اغوا اور اس کے بعد گینگ ریپ کا نشانہ بنایا ہے۔
واقعہ کے بعد پولیس نے مقدمہ درج کرتے ہوئے ایک ملزم کو بھی حراست میں لے لیا۔ایف آئی آر کے مطابق ٹوبہ ٹیک سنگھ موٹروے ایم 4 پر خاتون ملزمہ کی مدد 2 ملزمان نے لڑکی کو بوتیک میں نوکری کا جھانسہ دے کر گوجرہ بلایا تھا۔
ایف آئی آر کے مطابق گوجرہ سے 3 کارسوار ملزمان حماد، رحمٰن اور لائبہ نے متاثرہ لڑکی کو انٹرویو کا کہہ کر کار میں بیٹھایا اور گوجرہ سے فیصل آباد موٹروے ایم فور پر پستول دیکھا کر پہلے اغوا کیا اور پھر چلتی کار میں لڑکی سے دونوں ملزمان نے ریپ کیا۔پولیس کے مطابق گینگ ریپ کے بعد ملزمان متاثرہ لڑکی کو فیصل آباد انٹر چینج کے قریب ویرانے میں پھینک کر فرار ہو گئے۔اس ضمن میں پولیس نے بتایا کہ متاثرہ لڑکی طبی معائنہ کروایا گیا ہے جس میں زیادتی ثابت ہوئی ہے جبکہ لڑکی کا ڈی این اے بھی کروایا جا رہا ہے۔دوسری جانب پولیس نے حماد نامی ملزم کو گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا ہے جبکہ دیگر ملزمان کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔
قائم مقام ڈی پی او ٹوبہ ٹیک سنگھ سردار موراہن خان کے مطابق لڑکی کا ملزمان کے ساتھ موبائل پر رابطہ تھا اور انہوں نے بوتیک پر کام دلوانے کا جھانسہ دے کر انٹرویو کے لیے لڑکی کو بلایا تھا۔
انہوں نے بتایا کہ ملزمان نے ایک خاتون ملزم کی مدد سے لڑکی سے موٹر وے پر کار کے اندر گن پوائنٹ پر ریپ کیا۔ڈی پی او کے مطابق پولیس دوسرے دونوں ملزمان کو گرفتار کرنے کے لیے چھاپے مار رہی ہے۔
علاوہ ازیں وزیر اعلیٰ پنجاب اور آئی جی پنجاب نے واقعے کا نوٹس لے کر آر پی او فیصل آباد راجہ رفعت سے رپورٹ طلب کر لی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *